Home / کالم / آپ بھی انصاف کا مظاہرہ کریں

آپ بھی انصاف کا مظاہرہ کریں

فضل الرحمان سے ہزار اختلاف کے باوجود اگر اس نے صرف یہ کہا ہے کہ اس نے خواب میں حضرت آدم علیہ السلام سے فون پر بات کی تو اس میں بھڑکنے والی کوئی بات نہیں۔ خواب ہے، کچھ بھی دیکھ سکتے ہیں اور اس میں نہ تو عقیدہ زیرسوال آنا چاہیئے اور نہ ہی کسی کا درجہ ایمان۔ لیکن پھر اس کے ساتھ ساتھ دیوبندیوں کو اپنے ان رویوں پر بھی نظرثانی کرنا پڑے گی جو انہوں نے طاہرالقادری کے ساتھ 90 کی دہائی سے اب تک روا رکھے۔ طاہرالقادری نے بھی تو نبی ﷺ کے حوالے سے اپنے خواب ہی سنائے تھے، اگر فضل الرحمان خواب میں حضرت آدم کو ایپل یا سام سنگ کا موبائل تھما سکتا ہے تو طاہرالقادری کو بھی تو ایسا خواب آسکتا ہے جس میں نبی ﷺ اس سے جہاز کی ٹکٹ طلب کریں۔ طاہرالقادری کے اس خواب پر یہی دیوبندی لونڈے تھے جو کہا کرتے تھے کہ نبی جہاز کے ٹکٹ اور ہوائی سفر کے محتاج نہیں ہوتے، لیکن اب فضل الرحمان کے خواب سے تو لگتا ہے کہ وہ بھی انہی ذرائع مواصلات کا استعمال کرتے ہیں۔

پچھلے 30 برسوں سے آپ نے طاہرالقادری کو انہی باتوں سے اپنی تنقید کے نشانے پر رکھے رکھا، اسے مشرک اور پتہ نہیں کیا کیا کہا لیکن آج اللہ کی قدرت دیکھیں، آپ کے اکابرین بھی وہی باتیں کرنے پر مجبور ہو گئے جو طاہرالقادری نے 30 برس قبل کی تھیں۔مجھے فضل الرحمان کے خواب سے کوئی مسئلہ نہیں، مجھے آپ سے صرف یہ توقع ہے کہ آپ انصاف کا مظاہرہ کرتے ہوئے طاہرالقادری سے اپنے رویئے کی معافی طلب کریں!!! بقلم خود باباکوڈا

About nasirpiya

Hi, I am Nasir Piya the Owner of this Blog, Graduated in Computer Science. I love to writing the different type of informative Articles. By profession, I am a Blogger, Web Developer, Freelancer and SEO Professional.

یہ بھی دیکھیں

Baba Kodda

بلڈنگ، عمارت یا ادارے کو عزت کس سے؟

طوائف کے کوٹھے یا کسی دینی درسگاہ میں کیا فرق ہے؟ دونوں کی تعمیر میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے